مرجع عالی قدر اقای سید علی حسینی سیستانی کے دفتر کی رسمی سائٹخبریںhttp://www.sistani.org/سوال و جواب » دادن رشوه در جائی که رسیدن به حق ، متوقف بر دادن آن...<div style="background-color:#ffd;color:maroon;">دادن رشوه در جائی که رسیدن به حق ، متوقف بر دادن آن باشد چه حکمی دارد ؟<div>رشوه شرعاً اختصاص به محدوده قضاء دارد ، و دادن آن برای رسیدن به حق خود جایز است ، گرچه گرفتن آن حرام است .http://www.sistani.org/urdu/qa/26530/سوال و جواب » جس جگہ بغیر رشوت دیئے انسان اپنے حق تک نہ پہنچ سکتا...<div style="background-color:#ffd;color:maroon;">جس جگہ بغیر رشوت دیئے انسان اپنے حق تک نہ پہنچ سکتا ہو تو رشوت دینے کا کیا حکم ہے؟<div>رشوت شرعی لحاظ سے صرف قضاوت کے معاملات سے مخصوص ہے۔لیکن اپنے حق کے حصول کے لئے پیسہ دینا جائز ہے اگرچہ اسطرح پیسہ لینا حرام ہے۔http://www.sistani.org/urdu/qa/26529/محفوظ شدہ دستاویزات » مدرسہ سید الشہداء کابل میں ہونے والے دہشت گردی کے سانحہ کے بارے میں معظم لہ کے دفتر سے جاری شدہ بیان کا ترجمه<p class="c">بسم الله الرحمن الرحیم</p> <p class="c">(إنا لله وإنا الیه راجعون)</p> <p> </p> <p>یہ بھیانک جرم جو رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں انجام دیا گیا ، جس نے کابل کے سید الشهداء اسکول کی طالبات کو بڑی تعداد میں خاک خون میں غلطاں کردیا اور بیسیوں افراد کے شہید اور بڑی تعداد کے شدید زخمی ہونے کا باعث بنا اس واقعه نے ہر آزاد و باضمیر انسان کے دل کو تکلیف پہنچائی ہے اور غم و اندوہ سے بھر دیا ہے۔ اگرچہ گذشتہ کئی سالوں سے افغانستان کے عام شہری وقنا فوقتا سنگدل انتہا پسند گروپوں کے وحشیانہ حملوں کا شکار ہوتے رہتے ہیں لیکن یہ انسانیت سوز واقعہ اپنی نوعیت میں انتہائی تکلیف ده ہے جس کی نظیر کم ملتی ہے .<br>اس افسوسناک سانحہ پر افغانستان کے مظلوم عوام خاص طور پر غمزدہ خاندانوں کو تعزیت پیش کرتے ہیں اور خداوند عالم سے دعا کرتے ہیں کہ پسماندگان کو صبر جمیل اور زخمیوں کو شفائے عاجل عطا فرمائے۔<br>افغانستان کی موجودہ مشکل صورتحال اور انتہا پسندوں کے<br>پہلے سے کہیں زیادہ طاقت حاصل کرنے کے امکان کے پیش نظر افغانستان میں موجود تمام قومیتوں اور افراد کے درمیان یکجہتی اور اتحاد وقت کی اہم ترین ضرورت ہے ۔<br>افغان حکومت ،قومی و مذہبی رہنماؤں اور عمائدین سے بھی توقع کی جاتی ہے کہ وہ عام شہریوں خصوصا نسلی اور مذہبی اقلیتوں کو دہشت گرد گروہوں کے ظلم و ستم سے بچانے کے لئے مناسب اقدامات کریں گے۔<br>مسلم ممالک اور عالمی برادری کا بھی یہ فرض ہے کہ وہ ان مشکل حالات میں افغانستان کی بے بس قوم کو تنہا نہ چھوڑیں اور اس ملک کے مستقبل کے لئے بدخواہوں کے تیار کردہ مذموم منصوبوں کو پورا ہونے کی اجازت نہ دیں کہ جس کے نتیجے میں مزید بے گناہ لوگوں کو انتہا پسند اپنے مجرمانہ حملوں کا نشانہ بنائیں۔ ہم اللہ تعالٰی سے دعا گو ہیں کہ وہ افغانستان کے معزز عوام کے وقار اور سربلندی کو ہمیشہ کے لئے قائم رکھے۔</p> <p class="c">۲۷ /رمضان /۱۴۴۲هـ</p> <p class="c">دفتر آیت الله سیستانی ـ نجف اشرف</p>http://www.sistani.org/urdu/archive/26525/سوال و جواب » توبہ کیسے کریں؟ <div style="background-color:#ffd;color:maroon;">توبہ کیسے کریں؟ <div>توبہ کی حقیقت گناہ سے پشیمان ہونا ہے اس لیے کہا گیا ہے کہ پشیمانی ہی توبہ ہے اور حقیقی پشیمانی یہ ہے کہ انسان ہمیشہ کے لیے گناہ ترک کرنے کا مستحکم ارادہ رکھتا ہو، اور گذشتہ گناہوں کا جبران کرے، اگراس کا گناہ حق اللہ ہے تو اس کی بارگاہ میں مغفرت طلب کرے، اگر اس عمل کی قضاء یا کفارہ ہو تو ادا کرے اور اگر حق الناس ہے تو اسے راضی کرے اور اگر ایسا کرنے سے اس کی توہین ہوتی ہو تو ہدیہ کے عنوان سے اسے دے سکتا ہے یا پھر اس کے اکائونٹ میں بھیج دے۔ توبہ فقط استغفراللہ کہنے سے نہیں ہوتی بلکہ مستحکم ارادہ ہو کہ گناہ سے دوری کرے اورحتی الامکان اس کی بھرپائی کرے۔ گناھکار انسان کو خدا کی رحمت سے مایوس نہیں ہونا چاہیے خدا وند مہربان اور بخشنے والا ہے اور توبہ کرنے والے کو دوست رکھتا ہے۔ حدیث میں آیا ہے کہ : ( ایک لمحہ کی فکرستّر سال کی عبادت سے بہتر ہے) ‎ ‎ وہ چیزیں جو توبہ کرنے میں ماثّر ہے خداوند کی عظمت، اس کا بندوں پر حق، وہ ہر چیز پر حاضر و ناظر ہے ان تمام چیزوں کے بارے میں فکر کرنا جیسا کہ حدیث میں امیر المومنین ع سے منقول ہے : تنہائی میں بھی خداوند کی معصیت سے ڈریں کیونکہ جو خدا دیکھ رہا ہے وہی حکم کرنے والا بھی ہے۔ http://www.sistani.org/urdu/qa/26515/محفوظ شدہ دستاویزات » مرجع عظیم الشان آقای سیستانی (مد ظلہ) اور کیتهولک عیساییوں کے رہبر پاپ فرانسس کی ملاقات کے بارے میں دفتر کا بیان<p class="c">بسم الله الرحمن الرحیم‌</p> <p><br>آیت الله سیستانی (مد ظلہ) نے آج صبح ( پاپ فرانسس) کیتهولک عیسائی کلیسہ کے پاپ اور واٹیکان کے رئیس سے ملاقات کی۔<br>اس ملاقات میں دور حاضر میں بشریت کی مشکلات کے حل کے لیے خداوند متعال اور اس کے رسولوں پر ایمان رکھنے اور اخلاقی اصول پر پابند رہنے کے مثبت اثرات پر تبادلہ خیال کیا ۔<br>مزید حضرت آیت اللہ سیستانی نے مختلف ممالک کے م‍ظلومین۔ اور ان پر کیے جانے والے مظالم اور سختیاں، فکری اور دینی تشدد، فطری آزادی کو ختم کرنا، معاشرے میں عدالت اور انصاف نہ ہونا، بطور خاص ہمارے علاقے (مشرق وسطی) میں اقتصادی محاصرہ، بے گھرو ساماں ہونا، خصوصا ملت فلسطین اور ان کی لی گئی زمینیں جس کی وجہ سے یہ ملت رنج و تکلیف میں ہے۔ کے حوالے سے گفتگو کی۔<br>معظم لہ نے ضمنا اس پر بھی تاکید کی کہ ادیان کے بزرگ اور روحانی رہبر مظلوموں کی حمایت اور ان کے رنج اور تکلیف کو کم کرنے میں اثر رکھتے ہیں، اور یہ امید ظاہر کی کہ وہ مربوط افراد بالخصوص بڑی طاقتوں کو حکمت اور عقل کی پیروی کو ترجیح دینے، جنگ وجدال کی زبان سے دوری کرنے، اور اور ذاتی مفاد کے لیے دوسری ملتوں کی آزادی اور حق ضایع نہ کرنے پر تر‏غیب دلایں۔<br>اور اسی طرح قوموں میں آپسی اتحاد، صلح امن کے ساتھ ‎زندگی گزارنے، معاشرے میں لوگوں کے حقوق کی رعایت اور ایک دوسرے کے مختلف ن‍ظریات کا احترام کرنے کی اہمیت پر تاکید کی۔<br>معظم لہ عراق کی اہمیت، اس کی تاریخی عظمت اور وہاں کے لوگوں میں ۔مختلف نظریات کے باوجود۔ پائی جانے والی نیک خصلتوں کے حوالے سے اظہار امید کی کہ جلد ہی ان کی مشکلات اور پریشانیاں حل ہوں۔ <br>اور آپ نے بتایا کہ ان کا اہتمام ہے کہ عراق میں رہنے والے عیسائی افراد صلح اور امنیت کے ساتھ دوسرے عراقیوں کی طرح زندگی گزاریں اور انھے ان کا قانونی حق ملے، اور مرجعیت دینی کا گذشتہ سالوں میں ان پر کیے جانے والے مظالم۔ بالخصوص جب ٹیررسٹ افراد نے عراق کے چند صوبوں کے وسیع علاقے کو اپنے قبضے میں کر لیا تھا اور شرم آور اعمال اور ظلم کے مرتکب ہو‎ۓ تھے۔ کے مقابل میں کیا نقش تھا۔<br> آخر میں معظم لہ نے پاپ اور کتھولک عیسائیت کی پیروی کرنے والوں اور تمام بشریت کی خوشبختی کے لیے دعا کی اور ان کا اس سفر کے لیے جو انھوں نے ملاقات کے لیے کیا اور زحمت فرمائی شکریہ ادا کیا۔</p> <p class="c"><br>21 رجب 1442 ہجری<br>دفتر آیت اللہ سیستانی (مد ظلہ) نجف اشرف۔</p>http://www.sistani.org/urdu/archive/26514/سوال و جواب » مجھے غسل کرنے میں بہت شک ہوتا ہے اور ہر‏دفعہ غسل کرنے...<div style="background-color:#ffd;color:maroon;">مجھے غسل کرنے میں بہت شک ہوتا ہے اور ہر‏دفعہ غسل کرنے میں ایک گھنٹے سے زیادہ وقت لگ جاتا ہے یہاں تک کہ نماز قضاء ہو جاتی ہے مجھے کیا کرنا چاہیے؟<div>یہ کام جایز نہیں ہے معمول سے زیادہ وقت صرف نہ کریں دوسروں کی طرح غسل کریں وقت کے لحاظ سے بھی اور پانی خرچ کرنے کے لحاظ سے بھی، اسراف کرنا حرام ہے، اور شیطان سے پرہیز کریں کہ نماز کو قضاء کرنے والے کا عذاب سخت ہے۔ http://www.sistani.org/urdu/qa/26507/سوال و جواب » جو شخص ‎زیادہ شک کرتا اسے کیا کرنا چاہیے؟<div style="background-color:#ffd;color:maroon;">جو شخص ‎زیادہ شک کرتا اسے کیا کرنا چاہیے؟<div>شکی انسان کو یہ نصیحت ہے کہ خود کی اصلاح کرے اور اس بیماری سے نجات پانے کے دو راستے ہیں: ۱۔اس بات پر توجہ کرے کہ یہ حالت اسلام اور عقل کے نزدیک ناپسندیدہ ہے کیونکہ انسان میانہ روی کی حالت سے خارج ہو جاتا ہے اور بغیر کسی نتیجے کے اپنی انسانی صلاحیتوں کو ضایع کرتا ہے، اور یہ کام ہرگز پرہیزگاری نہیں ہے، اسلام میں اس کی سخت مذمت ہے اوریہ شیطان کی پیروی ہے، پس اگر انسان اس بات کو سمجھ رہا ہو تو اس بری بیماری سے نجات پانے کا دوسرا مرحلہ یہ ہوگا۔ ۲۔ اپنے نفس پر قابو پانے کی پوری کوشش کرے ، اس کے بہکاوے میں نہ آۓ اور اس کو اپنے پر مسلط نہ ہونے دے اور یہ یقین رکھے کہ خدا وند اسے شک پر توجہ نہ کرنے کے لیے سرزنش نہیں کرے گا، مثلا اگر شک کرے کہ بدن کے کسی حصے پر پانی پہونچا یا نہیں اور اپنے شک کی پرواہ نہ کرے اور یہ سوچے کہ طہارت حاصل ہو گئی ہے، اور جتنا بھی ان شکوک سے بے توجہی کرے خیال اور وسوسہ کمزور ہوتا جا‎‎‎ۓ گا یہاں تک کی شیطان اس سے مایوس ہو جاۓ گا، طہارت اور نجاست کے مسالہ میں ایک میانہ روی اس کے اندر پیدا ہو جاۓ گی، یقین رکھے کہ اگر اس مخالفت کے سلسلے کو جاری رکھے تو یقینا شیطان پر کامیابی حاصل ہوگی اور اللہ کی مدد اس کے شامل حال ہوگی، شیطان کا فریب کمزور ہو جاۓ گا ، خدا وند قرآن میں فرماتا ہے( بیشک شیطان کا مکرو فریب کمزور ہے)http://www.sistani.org/urdu/qa/26505/سوال و جواب » جو شخص ‎زیادہ شک کرتا اسے کیا کرنا چاہیے؟<div style="background-color:#ffd;color:maroon;">جو شخص ‎زیادہ شک کرتا اسے کیا کرنا چاہیے؟<div>شکی انسان کو یہ نصیحت ہے کہ خود کی اصلاح کرے اور اس بیماری سے نجات پانے کے دو راستے ہیں: 1۔اس بات پر توجہ کرے کہ یہ حالت اسلام اور عقل کے نزدیک ناپسندیدہ ہے کیونکہ انسان میانہ روی کی حالت سے خارج ہو جاتا ہے اور بغیر کسی نتیجے کے اپنی انسانی صلاحیتوں کو ضایع کرتا ہے، اور یہ کام ہرگز پرہیزگاری نہیں ہے، اسلام میں اس کی سخت مذمت ہے اوریہ شیطان کی پیروی ہے، پس اگر انسان اس بات کو سمجھ رہا ہو تو اس بری بیماری سے نجات پانے کا دوسرا مرحلہ یہ ہوگا۔ 2۔ اپنے نفس پر قابو پانے کی پوری کوشش کرے ، اس کے بہکاوے میں نہ آۓ اور اس کو اپنے پر مسلط نہ ہونے دے اور یہ یقین رکھے کہ خدا وند اسے شک پر توجہ نہ کرنے کے لیے سرزنش نہیں کرے گا، مثلا اگر شک کرے کہ بدن کے کسی حصے پر پانی پہونچا یا نہیں اور اپنے شک کی پرواہ نہ کرے اور یہ سوچے کہ طہارت حاصل ہو گئی ہے، اور جتنا بھی ان شکوک سے بے توجہی کرے خیال اور وسوسہ کمزور ہوتا جا‎‎‎ۓ گا یہاں تک کی شیطان اس سے مایوس ہو جاۓ گا، طہارت اور نجاست کے مسالہ میں ایک میانہ روی اس کے اندر پیدا ہو جاۓ گی، یقین رکھے کہ اگر اس مخالفت کے سلسلے کو جاری رکھے تو یقینا شیطان پر کامیابی حاصل ہوگی اور اللہ کی مدد اس کے شامل حال ہوگی، شیطان کا فریب کمزور ہو جاۓ گا ، خدا وند قرآن میں فرماتا ہے( بیشک شیطان کا مکرو فریب کمزور ہے) http://www.sistani.org/urdu/qa/26504/سوال و جواب » اگر رخصتی سے پہلے لڑکی کا طلاق ہو جا‎ۓ تو کیا اس کا...<div style="background-color:#ffd;color:maroon;">اگر رخصتی سے پہلے لڑکی کا طلاق ہو جا‎ۓ تو کیا اس کا مہریہ ادا کرنا ہرگا؟ ا <div>گر نکاح کے بعد ہمبستری کیا ہو تو پورا مہریہ اور اگر ہمبستری نہ کیا ہو تو آدھا مہریہ ادا کرنا ہوگا۔ http://www.sistani.org/urdu/qa/26503/سوال و جواب » اگر لڑکی کا صرف نکاح ہوا ہو رخصتی نہیں ہوئی ہو اور...<div style="background-color:#ffd;color:maroon;">اگر لڑکی کا صرف نکاح ہوا ہو رخصتی نہیں ہوئی ہو اور اس کا طلاق ہو جا‎‎ۓ تو کیا اسے عدت رکھنی ہوگی ؟ <div>اگر نکاح کے بعد ہمبستری نہیں ہوئی ہے اور منی بھی رحم میں کسی طرح داخل نہیں ہوئی ہے تو عدت رکھنا واجب نہیں ہے http://www.sistani.org/urdu/qa/26502/سوال و جواب » بعض عورتین نسبندی کروا لیتی ہیں اس لیے ان کو حیض نہیں...<div style="background-color:#ffd;color:maroon;">بعض عورتین نسبندی کروا لیتی ہیں اس لیے ان کو حیض نہیں آتا ایسی عوتوں کو پاکی میں طلاق دینے اورعدت کی مدت کے بارے میں کیا حکم ہے ؟ <div>طلاق آخری مرتبہ ہمبستری کرنے کے تین مہینے بعد دے سکتا ہے اور عدت بھی تین مہینے رکھنی ہوگی۔ http://www.sistani.org/urdu/qa/26501/سوال و جواب » حیض کی حالت میں طلاق صحیح ہے؟<div style="background-color:#ffd;color:maroon;">حیض کی حالت میں طلاق صحیح ہے؟<div>صحیح نہیں ہے۔http://www.sistani.org/urdu/qa/26499/سوال و جواب » جس عورت سے متعہ کیا ہے اسے طلاق کیسے دینگے ؟ <div style="background-color:#ffd;color:maroon;">جس عورت سے متعہ کیا ہے اسے طلاق کیسے دینگے ؟ <div>متعہ کے لیے طلاق نہیں ہے بلکہ باقی مدت بخش دینے سے متعہ ختم ہو جاتا ہے۔http://www.sistani.org/urdu/qa/26498/سوال و جواب » طلاق کی عدت کتنے مہینے رکھنی ہوگی؟ <div style="background-color:#ffd;color:maroon;">طلاق کی عدت کتنے مہینے رکھنی ہوگی؟ <div>اس کے بعد کہ شوہر نے اسے پاکی میں طلاق دیا ہو اور اس پاکی میں ہمبستری بھی نہ کیا ہو دو دفعہ حیض آنے کے بعد جب تیسری دفعہ حیض آۓ تو عدت پوری ہو جاۓ گی۔ http://www.sistani.org/urdu/qa/26497/